Wed - 2018 مئی 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 76787
Published : 9/6/2015 19:3

روزہ ناقابل ترک مطلق

پروردگار نے ایک ضعیف انسانوں سے روزہ ساقط کر کے اپنے رحم و کرم کا اعلان کیا ہے اور دوسری طرف حائضہ عورت پر قضا واجب کر کے یہ ثابت کر دیا ہے کہ روزہ ترک مطلق کے قابل نہیں ہے اور وہ بعض حالات میں ترک بھی ہو جائے تو اس کی قضا بہر حال واجب ہے جب کہ نماز ترک مطلق کا شکار ہو سکتی ہے اور حائضہ عورت کو ایام حیض کی نمازوں کی کی قضا نہیں کرنا ہے حالانکہ عام تصور کا اندازہ ہوتا ہے کہ اس نے فروع دین میں اول نماز کر رکھا ہے اور بعد روزہ کا درجہ قرار دیا ہے۔
پروردگار نے ایک ضعیف انسانوں سے روزہ ساقط کر کے اپنے رحم و کرم کا اعلان کیا ہے اور دوسری طرف حائضہ عورت پر قضا واجب کر کے یہ ثابت کر دیا ہے کہ روزہ ترک مطلق کے قابل نہیں ہے اور وہ بعض حالات میں ترک بھی ہو جائے تو اس کی قضا بہر حال واجب ہے جب کہ نماز ترک مطلق کا شکار ہو سکتی ہے اور حائضہ عورت کو ایام حیض کی نمازوں کی کی قضا نہیں کرنا ہے حالانکہ عام تصور کا اندازہ ہوتا ہے کہ اس نے فروع دین میں اول نماز کر رکھا ہے اور بعد روزہ کا درجہ قرار دیا ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 مئی 23