چهارشنبه - 2019 مارس 27
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 76951
تاریخ انتشار : 13/6/2015 20:33
تعداد بازدید : 13

ایٹمی مذاکرات کی جگہ کی تبدیلی کا امکان

ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے درمیان ہونے والے ایٹمی مذاکرات کی جگہ تبدیل کئے جانے کا امکان ہے-
ایسی خبریں سامنے آنے کے بعد کہ صیہونی حکومت نے ان ہوٹلوں کی جاسوسی کرائی ہے جہاں ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے درمیان ایٹمی مذاکرات ہوتے رہے ہیں، ایران کی مذاکراتی ٹیم مذاکرات کی جگہ کی تبدیلی کے امکان کا جائزہ لے رہی ہے- ویانا میں ایک باخبر ذریعے نے ہمارے نمائندے سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ مذاکرات کی اہمیت اور بڑھتی ہوئی حساسیت نیز حتمی جامع معاہدے کی ڈیڈ لائن قریب آنے کے پیش نظر مذاکرات کار، مذاکرات کی جگہ تبدیل کئے جانے کا جائزہ لے رہے ہیں- اطلاعات کے مطابق مذاکرات کار ویانا کے بجائے کسی دوسرے شہر یا کسی اور ملک میں مذاکرات کئے جانے کے بارے میں غور کر رہے ہیں- قابل ذکر ہے کہ اس سے پہلے اسلامی جمہوریہ ایران نے باضابطہ طور پر ایٹمی مذاکرات کے مقامات کی سیکورٹی کے بارے میں آسٹریا اور سوئٹزرلینڈ کی حکومتوں کو اپنی تشویش سے آگاہ کر دیا تھا- ایران نے آسٹریا کی وزارت خارجہ سے مذاکرات کی جگہ کی سیکورٹی سے متعلق سخت تدابیر اختیار کرنے کا مطالبہ بھی کیا تھا- واضح رہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے درمیان جامع ایٹمی معاہدے کے مسودے کی تدوین کے لئے مذاکرات کا ساتواں دور گزشتہ بدھ کے روز ویانا کے ہوٹل کوبرگ میں شروع ہوا- ان مذاکرات میں یورپی یونین کی خارجہ پالیسی شعبے کی نائب سربراہ ہیلگا اشمید اور اسلامی جمہوریہ ایران کے نائب وزرائے خارجہ سید عباس عراقچی اور مجید تخت روانچی شریک ہوئے- ہیلگا اشمید مذاکرات میں گروپ پانچ جمع ایک کی نمائندگی کر رہی ہیں-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :