Sunday - 2018 Sep 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 77492
Published : 24/6/2015 20:24

رہبر انقلاب کی سفارشات خارجہ پالیسی میں بنیادی اہمیت کی حامل

ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان مرضیہ افخم نے کہا ہے کہ رہبر انقلاب اسلامی کے رہنما ارشادات ملک کی خارجہ پالیسی میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں۔ تہران میں اپنی ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران ملکی اور غیر ملکی نامہ نگاروں سے بات چیت کرتے ہوئے مرضیہ افخم کا کہنا تھا کہ رہبر انقلاب اسلامی نے گزشتہ روز اعلی حکام کے ساتھ ملاقات میں ایٹمی معاملے کے حوالے سے جو ہدایات دی ہیں وہ قابل قدر اور مذاکراتی ٹیم کی حمایت کی مظہر ہیں۔ انہوں نے ایران اور پانچ جمع ایک کے درمیان ممکنہ ایٹمی سمجھوتے کے بارے میں کہا کہ ایران کی مذاکراتی ٹیم تمام معاملات پر بات چیت کر رہی ہے اور ہمیں دیکھنا ہوگا کہ بات چیت کا کیا نتیجہ نکلتا ہے۔ ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان کہا کہ رہبر انقلاب اسلامی نے جن ریڈلائنوں کی تشریح فرمائی ہے وہ مذاکرات میں انتہائی مددگار ثابت ہوں گی اور ایران کی مذاکراتی ٹیم ان ریڈلائنوں کو سامنے رکھ کر مذاکرات میں حصہ لے رہی ہے۔ مرضیہ افخم نے ایران اور چھے بڑی طاقتوں کے درمیان ممکنہ ایٹمی معاہدے کے مسودی کی تیاری کے بارے میں کہا کہ آخری اقدامات انتہائی فیصلہ کن اور سخت ہیں اور اس وقت انتہائی پیشہ ورانہ سطح پر مذاکرات کا عمل جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ امید ہے کہ ایک اچھے معاہدے کی صورت میں پوری دنیا اس معاہدے کا احترام کرے گی۔ ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان نے مجلس شورائے اسلامی میں ایٹمی ثمرات کے تحفظ سے متعلق بل کی منظوری کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ مذکورہ بل قانون کا درجہ حاصل کرلیتا ہے تو پھر سب کو اس کی پیروی کرنا ہوگی۔ مرضیہ افخم نے شام کے وزیر داخلہ کے دورہ ایران اور انسداد دہشتگردی سے متعلق تہران دمشق سجھوتے پر دستخط کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ایران، عراق اور شام کے درمیان صلاح و مشورے کا عمل پہلے سے چلا آرہا ہے اور اس سلسلے میں تینوں ملکوں کا ایک اجلاس جلد ہی بغداد میں ہوگا۔ ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان نے رمضان المبارک کے دوران یمن پر سعودی جارحیت کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یمن کے بحران کو صرف سیاسی طریقے سے حل کیا جاسکتا ہے۔ انہوں نے یمن کے بارے میں جنیوا اجلاس کی ناکامی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بحران یمن کو حل کرنے کے لئے سیاسی عمل کی تقویت ضروری ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Sep 23