Saturday - 2018 july 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 77502
Published : 24/6/2015 21:24

روزہ اور خود اعتمادی

یہ روزہ ہی ہے جو روزہ دار کی خود اعتمادی کو اس حد تک لے جاتا ہے کہ وہ اپنی روزمرہ کی عادتوں کو ترک کرکے صرف حکمِ الٰہی کا پابند ہوکر رہ جاتا ہے
روزہ کے لاتعداد جسمانی ،نفسیاتی اور روحانی فوائد میں سے ایک فائدہ یہ بھی ہے کہ یہ روزہ دار کی خود اعتمادی کو تقویت بخشتا ہے۔ اسکے باطن میں چھپے روحانی طاقت کے خزانے کو آشکار کردیتا ہے۔ چنانچہ جب ایک مسلمان ماہِ رمضان کے دوران مختلف موسموں میں مختلف تکالیف برداشت کرکے صبرو رضا کی انمول نعمت سے آشنا ہوتا ہے تویہ آشنائی اسے روحانی قوت درک کرنے اور اسکا صحیح استعمال کرنے میں معاون ومددگار ثابت ہوتی ہے۔جون جولائی کی گرمی میں جب چند گھڑیوں بعد ہی انسان کو پانی کی طلب محسوس ہوتی ہے روزہ دار دن بھر پیاس کی شدت کو برداشت کرکے گویا بزبان حال کہتا ہے کہ زندگی کا سفر رضائے الہٰی کے تحت طے کر سکتا ہوں خو اہ سحرائے زیست میں پیاسا بھی رہنا پڑے۔ کڑاکے کی سردی میں جب دیر تک بستر سے باہر آنے کو جی نہیں چاہتا ہے روزہ دار سحر کو ہی اٹھ کربادِ سحر گاہی کے سرد جھونکوں سے ایک طرف اپنے دل میں روشن ایمانی شعلوں کو تیز ترکردیتا ہے۔ اور دوسری طرف ہوائے خزاں سے عبدیت کے چمنستان میں عبادت کے پھولوں کومہکانے کے لیئے بادِ نوبہار کا کام لیتا ہے۔ الغرض جتنے بھی صبرآزمامراحل سامنے آجاتے ہیں۔ روزہ دار کی خوداعتمادی میں اضافہ ہوتا چلا جاتا ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 july 21