شنبه - 2019 مارس 23
ہندستان میں نمائندہ ولی فقیہ کا دفتر
Languages
Delicious facebook RSS ارسال به دوستان نسخه چاپی  ذخیره خروجی XML خروجی متنی خروجی PDF
کد خبر : 77567
تاریخ انتشار : 27/6/2015 17:58
تعداد بازدید : 11

داعش کے مقابلے کا بہانہ، نیٹو کی عراق واپسی

داعش دہشت گرد گروہ کے مقابلے کے بہانے نیٹو اتحاد عراق واپسی کا ارادہ رکھتا ہے-
برطانیہ کے اخبار ڈیلی ٹیلی گراف کے مطابق نیٹو اتحاد عراق سے نکلنے کے بعد داعش دہشت گرد گروہ کے مقابلے کی غرض سے عراقی فوجیوں کو تربیت دینے کے لئے ایک بار پھر عراق کا رخ کرنے کا ارادہ رکھتا ہے- نیٹو اتحاد نے چار سال پہلے عراق سے انخلا کیا تھا، اور اب وہ، داعش دہشت گرد گروہ کے مقابلے میں مدد فراہم کرنے کے بہانے عراق واپسی کا ارادہ رکھتا ہے- نیٹو کے منصوبے کے مطابق، کہ جس پر آئندہ ماہ عمل درآمد ہوگا، اعلی کمانڈر عراق کی قومی دفاعی اسٹریٹیجی کو وسعت دیں گے اور میدان جنگ میں فوجی یونٹوں کی قیادت کریں گے- نیٹو میں امریکی نمائندے نے کہا ہے کہ خصوصی فورس میں شریک باسٹھ ممالک یا تو خود نیٹو کے رکن ہیں یا پھر نیٹو کے حامی شمار ہوتے ہیں- قابل ذکر ہے کہ عراق میں داعش دہشت گرد گروہ کے مقابلے میں نیٹو کی شرکت اس گروہ کے بہانے عراق میں مغربی ممالک کی کارروائی میں شدت آنے کی غماز ہے- یہ ایسی حالت میں ہے کہ عراق میں داعش دہشت گرد گروہ کے خلاف قائم کئے جانے والے اتحاد کی کارروائیوں کا اب تک کوئی خاطر خواہ کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہوا ہے-


نظر شما



نمایش غیر عمومی
تصویر امنیتی :