Wed - 2018 مئی 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 79661
Published : 29/7/2015 13:13

اقوام متحدہ کے رپورٹر کو بھاری رشوت کا انکشاف

وکی لیکس ویب سائٹ نے سعودی عرب کی وزارت خارجہ کے اہم دستاویزات شائع کئے ہیں جن میں وزارت خارجہ اور اس ملک کے سفارت خانوں کے درمیان خفیہ خطوط اور دستاویزات بھی شامل ہیں-
وکی لیکس ویب سائٹ کی شائع شدہ ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ کویت میں سعودی عرب کے سفارت خانے نے اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے خصوصی رپورٹر احمد شہید کو دس لاکھ ڈالر کی رشوت دی ہے- اس خفیہ دستاویز کے مطابق سعودی عرب نے یہ رقم دے کر احمد شہید سے کہا تھا کہ وہ، ایران کے خلاف رپورٹ میں سخت موقف اختیار کریں- وکی لیکس نے سعودی عرب کی وزارت خارجہ کے پانچ لاکھ خفیہ دستاویزات شایع کئے ہیں جن میں سعودی سفارت خانوں اور وزارت خارجہ کے مابین ہونے والے خطوط کے تبادلے، ای میل اور ٹیلیگراف شامل ہیں- واضح رہے کہ مغربی ممالک، انسانی حقوق کے مسئلے میں ہمیشہ ایران پر دباؤ ڈالنے کی کوشش کرتے رہے ہیں- احمد شہید، ایران کے انسانی حقوق کے سلسلے میں اقوام متحدہ کے خصوصی رپورٹر ہیں اور دوسری رپورٹوں کے برخلاف صرف ان کی جانب سے پیش کی جانے والی معلومات ہی معتبر سمجھی جاتی ہیں اور ایران کے ساتھ تعلقات میں نشیب و فراز بھی ان ہی رپورٹوں کی بنیاد پر آتا ہے- وکی لیکس کی جانب سے شائع شدہ اس دستاویز میں یہ بات بھی کہی گئی ہے کہ احمد شہید نے دس لاکھ ڈالر کی رقم لینے کے بعد سعودی عرب کے وزیر خارجہ کا شکریہ ادا کیا اور اس بات کی یقین دہانی کرائی کہ ایران کے سلسلے میں مزید شدت پسندی سے کام لیا جائے گا-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 مئی 23