Saturday - 2018 August 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 79710
Published : 29/7/2015 16:11

ایران اور افغانستان کے کسٹم سربراہوں کی ملاقات

اسلامی جمہوریہ ایران اور افغانستان کے محکمہ کسٹم کے سربراہوں نے دونوں ملکوں کے مشترکہ سرحدی کسٹم پروگرام پر عمل درآمد پر تاکید کی ہے- اطلاعات کے مطابق افغانستان کے محکمہ کسٹم کے سربراہ نجیب اللہ وردک نے منگل کے روز تہران میں ایرانی محکمہ کسٹم کے سربراہ مسعود کرباسیان سے ملاقات کی- اس ملاقات میں دونوں ممالک کے کسٹم محکموں کے سربراہوں نے تجارتی لین دین میں ا ضافے کے مقصد سے سرحدی کسٹم پروگرام پر عمل درآمد پر تاکید کی- مسعود کرباسیان نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ دونوں ممالک دوستانہ تعلقات اور مشترکہ اہداف کے حامل ہیں، کہا کہ ایران اور افغانستان کے مابین اچھے سیاسی تعلقات ہیں اور دونوں ممالک کے اقتصادی تعلقات کی سطح میں بھی فروغ آنا چاہئے- انہوں نے کہا کہ حالیہ برسوں کے دوران ایران سے افغانستان کے لئے سامان کی ٹرانزٹ میں قابل قدر اضافہ ہوا ہے اور بعض پابندیوں کے ہٹنے کے بعد آئندہ مہینوں میں افغانستان کو سامان کی منتقلی زیادہ آسانی سے انجام پائے گی- انہوں نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ چابہار، افغانستان، ملیک کا راستہ بحیرہ عمان تک رسائی کا سب سے چھوٹا راستہ ہے، کہا کہ علاقے میں ٹرانزٹ میں توسیع ہمسایہ ممالک کے تعاون کے بغیر ممکن نہیں ہو گی- اس ملاقات میں افغانستان کے کسٹم محکمے کے سربراہ نجیب اللہ وردک نے ایران اور گروپ پانج جمع ایک کے درمیان ایٹمی معاہدہ انجام پانے پر خوشی کا اظہار کیا اور اس اقدام کو عالمی سطح پر ایک اہم واقعے سے تعبیر کیا- انہوں نے کہا کہ افغانستان اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ کسٹم سے متعلق ایک مفاہمتی نوٹ پر دستخط کرنے کا خواہاں ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 August 18