Wed - 2018 مئی 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 79715
Published : 29/7/2015 16:20

فیڈریکا موگرینی کی صدر مملکت سے ملاقات

صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے ایٹمی معاہدے کو بین الاقوامی مشکلات اور اختلافات کے حل کے سلسلے میں سفارت کاری کی طاقت کا مظاہرہ قرار دیا ہے۔
صدارتی ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق یورپی یونین کی خارجہ پالیسی شعبے کی سربراہ فیڈریکا موگرینی نے منگل کے دن تہران میں صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی سے ملاقات کی۔ صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے اس ملاقات میں کہا کہ جس طرح ایٹمی معاہدے تک رسائی کے لئے کوشش کی گئی اسی طرح اس پر مکمل طرح سے عملدرآمد کے لئے بھی کوشش کی جانی چاہئے تاکہ ایرانی قوم اور ساری دنیا اس کے ثمرات سے فائدہ اٹھا سکے۔ ڈاکٹر حسن روحانی نے مزید کہا کہ ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے درمیان ہونے والا معاہدہ خطے، یورپ اور دنیا کے تعلقات کے سلسلے میں بہت اہم اور موثر ہوگا۔ اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر اور اعلی قومی سلامتی کونسل کے سربراہ ڈاکٹر حسن روحانی نے اس امید کا اظہار کرتے ہوئے کہ ویانا ایٹمی معاہدہ دوسرے علاقائی اور بین الاقوامی مسائل کے حل کے سلسلے میں ایک مثالی معاہدہ ثابت ہو گا، کہا کہ یہ معاہدہ دنیا کے تمام ممالک کے لئے اپنے اندر امن کا پیغام لئے ہوئے تھا اور اس بات کا گواہ ہے کہ اگر انصاف سے کام لیتے ہوئے بین الاقوامی معاہدوں کی پابندی کی جائے تو وہ اب بھی موثر ہیں اور مذاکرات کے ذریعے سیاسی مشکلات اور مسائل کو حل کیا جاسکتا ہے۔ یورپی یونین کی خارجہ پالیسی شعبے کی سربراہ فیڈریکا موگرینی نے اس ملاقات میں ایران اور گروپ پانچ جمع کے ایٹمی معاہدے کے بعد اپنے دورۂ ایران پر مسرت کا اظہار کیا۔ فیڈریکا موگرینی نے مذاکرات کو نتیجہ خیز بنانے کی بنا پر صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی اور ایران کی ایٹمی مذاکراتی ٹیم کو سراہا۔ یورپی یونین کی خارجہ پالیسی شعبے کی سربراہ نے اس بات کو بیان کرتے ہوئے کہ یورپی یونین ایران کے ساتھ تعلقات کا ایک نیا باب کھولنے کے سلسلے میں پر عزم ہے، کہا کہ آئندہ ہفتوں کے دوران یقینا مزید یورپی وفود ایران کا دورہ کریں گے جس سے اس بات کی نشاندہی ہوتی ہے کہ ایران کے ساتھ تعلقات میں توسیع کے بہت سے مواقع موجود ہیں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 مئی 23