Thursday - 2018 August 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 79738
Published : 30/7/2015 11:51

پارلیمنٹ، ایٹمی معاہدے پر عمل درآمد کے طریقہ کار کی نگراں

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ پوری حساسیت سے ویانا ایٹمی معاہدے پر عمل درآمد کے طریقہ کار کی نگرانی کرے گی- ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر ڈاکٹر علی لاریجانی نے منگل کی رات تہران میں یورپی یونین کے خارجہ پالیسی شعبے کی سربراہ فیڈریکا موگرینی سے گفتگو میں تاکید کے ساتھ کہا کہ آئین کے دائرے میں ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے ایٹمی معاہدے اور اس کے ملکی مفاد میں ہونے سے متعلق جائزہ لینے کا عمل آئندہ دنوں میں شروع ہو جائے گا- انھوں نے باہمی اور علاقائی مسائل میں ایران اور یورپ کے تعلقات کے مستقبل کو مثبت قرار دیا اور کہا کہ یورپی یونین اور ایران، تعاون کو فروغ دینے کے لئے ‎مشترکہ مفادات کے حامل ہیں جو علاقے کے حالات کو بہتر بنانے اور مشرق وسطی میں امن و استحکام قائم کرنے کے لئے موجودہ خطرات کو دور کرنے میں مدد کر سکتے ہیں- اس ملاقات میں فیڈریکا موگرینی نے بھی کہا کہ یورپی یونین نے ایران کو ہمیشہ ایک طاقت اور اہم شریک کی حیثیت سے دیکھا ہے اور وہ، تمام شعبوں میں ماضی کی طرح مضبوط تعلقات بحال کرنے کی کوشش کر رہی ہے- فیڈریکا موگرینی نے ایران کی پارلیمنٹ میں ویانا ایٹمی معاہدے کا جائزہ لئے جانے کو اہم قرار دیا اور کہا کہ پارلیمنٹ کی منظوری کے بعد اس معاہدے پر عمل درآمد اہم ہے جبکہ یورپی ممالک نے ویانا ایٹمی معاہدے پر عمل درآمد کے لئے ضروری اقدامات عمل میں لائے جانے کی کارروائی پہلے ہی شروع کر دی ہے- فیڈریکا موگرینی نے اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور یورپ کے درمیان، مختلف اقتصادی و تجارتی شعبوں اور دہشت گردی نیز منشیات کی اسمگلنگ کے خلاف جد و جہد سمیت علاقے کے مختلف مسائل میں تعاون، مثبت نتائج کا حامل ہو گا-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 August 16