Sunday - 2018 مئی 27
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 79747
Published : 30/7/2015 12:10

ایران اور فرانس: وزرائے خارجہ کی پریس کانفرنس

ایران اور فرانس کے وزرائے خارجہ نے اعلان کیا ہے کہ ایران اور فرانس، سیاسی اور اقتصادی شعبوں سمیت مختلف شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے کے خواہاں ہیں۔
ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے بدھ کے روز اپنے فرانسیسی ہم منصب لوران فابیوس کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس میں کہا کہ فریقین کا ارادہ ہے کہ سیاسی مذاکرات کے، اس سلسلے کو مختلف شعبوں میں فروغ دیا جائے جو اب تک جوہری شعبے تک محدود رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ فرانس اور ایران، جوہری مسائل کے علاوہ شدت پسندی، دہشت گردی اور منشیات کی اسمگلنگ کی روک تھام، ماحولیات، توانائی، نقل و حمل اور کار انڈسٹری کے شعبے میں بھی تعاون کر سکتے ہیں۔ محمد جواد ظریف نے امید ظاہر کی کہ فرانسیسی وزیر خارجہ کے اس دورے سے بعض غلط فہمیاں بھی دور ہو جائیں گی۔ پریس کانفرنس کے دوران فرانسیسی وزیر خارجہ لوران فابیوس نے بھی ایران اور فرانس کے مابین باہمی احترام کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ فرانسیسی عوام، ایران کی ثقافت، تاریخ و تمدن کا احترام کرتے ہیں۔ فرانسیسی وزیر خارجہ نے اس بات کی جانب اشارہ کیا کہ جوہری معاہدے نے ایران اور فرانس کے مابین تعلقات میں فروغ کا ماحول سازگار بنایا ہے۔ لوران فابیوس نے پابندیوں کے خاتمے کے بعد ایران کو ماحولیات، سیاحت، زراعت اور صنعت کے شعبوں میں تعاون کی پیش کش بھی کی۔ فرانسیسی وزیر خارجہ نے دعوی کیا کہ جوہری مذاکرات کے دوران فرانس کا موثر کردار رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایٹمی مسائل کے حل کے بارے میں اتفاق رائے پایا جاتا تھا اور نتیجے میں ایٹمی معاہدہ طے پا گیا۔ لوران فابیوس نے اس مسئلے پر زور دیا کہ ایران اور فرانس کا، علاقے میں انتہائی اہم کردار ہے اور ان کا شمار بااثر ممالک میں ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی اور انتہا پسندی کا مقابلہ کرنے میں دونوں ممالک دلچسپی رکھتے ہیں۔ لوران فابیوس نے کہا کہ ویانا ایٹمی معاہدہ صرف ایک فنی معاہدہ نہیں ہے بلکہ وہ، علاقے اور دنیا میں امن و سلامتی کو فروغ دینے میں بھی مددگار ثابت ہو سکتا ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 مئی 27