Sunday - 2018 Oct. 21
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 79748
Published : 30/7/2015 12:13

فرانسیسی وزیرخارجہ کی ڈاکٹر روحانی سے ملاقات

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے کہا ہے کہ ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے درمیان ہونے والا ایٹمی معاہدہ فریقین اور پورے خطے کے مفاد میں ہے- اطلاعات کے مطابق فرانس کے وزیر خارجہ لوران فابیوس نے بدھ کے روز تہران میں صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی سے ملاقات کی- اس موقع پر صدر مملکت ڈاکٹر حسن روحانی نے اس بات پر تاکید کرتے ہوئے کہ ویانا میں ہونے والے ایٹمی معاہدے سے متعلق تعاون اعتماد کے ساتھ ہونا چاہئے، کہا کہ تمام فریقوں کو ایٹمی معاہدے کے تحفظ کے لئے تمام کوششیں بروئے کار لانا چاہییں کیونکہ یہ معاہدہ دھمکیوں کو مواقع میں تبدیل کرنے کی جانب ایک اہم قدم ہے- ڈاکٹر حسن روحانی نے ایٹمی معاہدے کی منظوری کے عمل کی تکمیل کے لئے فریقین کی سنجیدہ کوشش کو معاہدے پر عمل درآمد کے سلسلے میں پہلا قدم قرار دیا اور کہا کہ معاہدے کے بارے میں حکومت ایران پختہ عزم رکھتی ہے اور جب تک مقابل فریق اپنے وعدوں پر عمل پیرا رہے گا حکومت بھی اپنے وعدوں پر کاربند رہے گی- انہوں نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ ویانا ایٹمی معاہدہ کسی بھی ملک کے خلاف نہیں ہے، کہا کہ سیکورٹی کی برقراری کی کوشش اور دہشت گردی سے مقابلہ جیسے علاقائی مسائل کے حل کے لئے ایران کے تعاون سے مذکورہ بات ثابت ہو سکتی ہے- صدر مملکت نے فرانسیی صدر کی طرف سے ان کو فرانس کے دورے کی دعوت کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ایران فرانس کے ساتھ اپنے تعلقات کے احیا کا خواہاں ہے اور ایٹمی معاہدہ دیگر ‏معاہدوں کی بنیاد بن سکتا ہے- انہوں نے کہا کہ حاصل ہونے والے موقع سے فائدہ اٹھانا چاہئے تاکہ ماضی کی محرومیوں کا ازالہ کیا جا سکے- فرانس کے وزیر خارجہ لوران فابیوس نے اس ملاقات میں کہا کہ حکومت فرانس دوستی اور باہمی احترام کی بنیاد پر ایران کے ساتھ تعلقات قائم کرنا چاہتی ہے- انہوں نے اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ بعض اوقات ممالک کے تعلقات میں نشیب و فراز آ جاتے ہیں، کہا کہ آج سے تہران اور پیرس کے درمیان تعاون کے نئے باب کا آغاز ہو رہا ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Oct. 21