Sunday - 2018 july 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 80591
Published : 12/8/2015 11:55

ایٹمی معاہدے کے بارے میں رائٹر سے جان کیری کی گفتگو

امریکہ کے وزیر خارجہ نے منگل کو رائٹر کو انٹرویو دیتے ہوئے ایران کے ایٹمی پروگرام کے بارے میں بے بنیاد دعوے دہرائے اور کہا کہ تہران ایٹمی ہتھیاروں کے حصول کی کوشش کرتا رہا ہے-
امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے ایران کو دھمکی دیتے ہوئے کہا ہے کہ ایران کے ایٹمی معاملے میں فوجی آپشن، اب بھی میز پر ہے لیکن پہلے ہم ایران کے ساتھ سفارتکاری کے آپشن کا پوری طرح جائزہ لینا چاہتے ہیں تاکہ فوجی آپشن استعمال کرنے کی ضرورت باقی نہ رہ جائے- واضح رہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے اپنے پرامن ایٹمی پروگرام کے بارے میں امریکہ، صیہونی حکومت اور اس کے اتحادی ممالک کے بے بنیاد دعؤوں کو ہمیشہ مسترد کیا ہے- ایران، ایٹمی ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ کے معاہدے پر دستخط کرنے والے ملکوں میں شامل ہے اور اس بنیاد پر اسے پرامن مقاصد کے لئے ایٹمی توانائی سے استفادے کا مکمل حق حاصل ہے- جان کیری نے اپنے اس انٹرویو میں امریکہ کے لئے ایٹمی معاہدے کی عدم منظوری کے نتائج سے متعلق بھی بات کی اور کہا کہ ہمیں اس معاہدے کو سیاسی نہیں بنانا چاہئے، عوام کو کانگریس کی جانب سے مشترکہ جامع ایکشن پلان کو مسترد کئے جانے کے انجام کے تمام پہلؤوں پر غور کرنا چاہئے- انھوں نے کانگریس میں مشترکہ جامع ایکش پلان کی عدم منظوری کے نتائج کے بارے میں کہا کہ اگر ہم معاہدے سے پیچھے ہٹ جائیں تو پھر ڈالر، دنیا کی اصلی کرنسی کے طور باقی نہیں رہ جائے گا- امریکہ کے وزیر خارجہ جان کیری نے کہا کہ اگر کانگریس، ایران کے ایٹمی معاہدے کو مسترد کرتی ہے تو پھر امریکہ اپنے اتحادیوں کو تہران کے ساتھ لین دین سے بھی نہیں روک سکے گا- انھوں نے مزید کہا کہ ایران کے ساتھ ایٹمی معاہدے سے امریکہ کے پیچھے ہٹنے کی صورت میں یورپی ممالک امریکی پابندیوں کی حمایت نہیں کریں گے یہاں تک کہ وہ، روس کے خلاف امریکہ کی قیادت میں عائد کی جانے والی پابندیوں سے بھی کنارہ کشی اختیار کرلیں گے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 july 22