Thursday - 2018 Dec 13
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 81879
Published : 1/9/2015 14:27

ڈاکٹر علی لاریجانی کی بان کی مون سے ملاقات

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے خطے میں دہشت گردی کے پھیلاؤ کے بارے میں خبردار کیا ہے۔ اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر ڈاکٹر علی لاریجانی نے اقوام متحدہ کے سیکریرٹری جنرل بان کی مون سے پیر کے دن نیویارک میں ملاقات کی۔ ڈاکٹر علی لاریجانی نے اس ملاقات کے دوران خطے میں دہشت گردی کے پھیلاؤ کے بارے میں خبردار کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کے پاس بے تحاشا مالی وسائل اور ہتھیار ہیں۔
 ڈاکٹر علی لاریجانی نے عراق، شام اور یمن میں دہشت گردوں کی موجودگی کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ داعش مخالف اتحاد نے نہ صرف قابل توجہ اقدامات انجام نہیں دیئے ہیں بلکہ داعش کے اثر و رسوخ اور ان کے وحشیانہ اقدامات میں اضافہ ہوا ہے۔
 اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر ڈاکٹر علی لاریجانی نے یمن میں جنگ جاری رہنے کے خطرات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس جنگ سے خطے میں بہت سی مشکلات پیدا ہو سکتی ہیں۔ 
ڈاکٹر علی لاریجانی نے یمن کے بحران کے حل کے سلسلے میں اقوام متحدہ کے کردار پر تاکید کرتے ہوئے جنگ بندی اور متحدہ قومی حکومت کی تشکیل کے لئے مذاکرات شروع کرنے کو اس بحران کا واحد حل قرار دیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اس اہم مقصد کے حصول کے لئے مدد دینے پر آمادہ ہے۔
 اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل بان کی مون نے اس ملاقات کے دوران چوتھے بین الپارلیمانی اجلاس میں اسلامی جمہوریہ ایران کے پارلیمانی وفد کی شرکت پر اپنی مسرت کا اظہار کرتے ہوئے ایران کی جانب سے علاقائی اور عالمی مسائل میں زیادہ سے زیادہ کردار ادا کئے جانے کی اپیل کی۔
بان کی مون نے خطے میں داعش سے متعلق ڈاکٹر علی لاریجانی کے نظریات کے ساتھ اتفاق کرتے ہوئے دہشت گردی سے مقابلے کے بارے میں ایران کے کردار کو مفید قرار دیا اور کہا کہ ایران اور اقوام متحدہ دہشت گردی اور انتہا پسندی سے مقابلے کے سلسلے میں آپس میں زیادہ تعاون کر سکتے ہیں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Dec 13