Wed - 2018 Dec 12
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 82040
Published : 3/9/2015 16:40

سلامتی کونسل کے اراکین کا حق ویٹو محدود کرنے پر روس کی مخالفت

اقوام متحدہ میں روس کے مستقل مندوب نے ایک بار پھر سلامتی کونسل کے اراکین کی جانب سے حق ویٹو کے استعمال کو محدود کرنے کی، فرانس کی تجویز کی مخالفت کی ہے- ایتارتاس کی رپورٹ کے مطابق اقوام متحدہ میں روس کے مستقل مندوب ویتالی چورکین نے بدھ کے روز اعلان کیا کہ سلامتی کونسل میں ویٹو کے حق کے استعمال کو محدود کرنے کی فرانس کی تجویز،رائے عامہ کو دھوکہ دینے کے لئے۔
فرانس نے دو ہزار چودہ میں ایک قرارداد کا مسودہ سلامتی کونسل کو پیش کیا تھا جس کی رو سے ، قتل عام اور جنگی جرائم کی تحقیقات جیسے معاملات میں اس کونسل کے مستقل اراکین کا حق ویٹو رضاکارانہ طور پر ختم کرنے کی تجویز پیش کی گئی تھی۔
روس کی مخالفت کی بناء پر فرانس کی یہ قرارداد منظوری نہیں ہوسکی- قابل ذکر ہے کہ بدھ کو سلامتی کونسل کے اجلاس میں ویٹو کے حق کو محدود کرنے کے معاملے پر ایک بار پھر بحث کئی گئی جس کی روس کے نمائندے نے سختی کے ساتھ مخالفت کی۔
واضح رہے کہ سلامتی کونسل کے مستقل اراکین روس، امریکہ، برطانیہ، فرانس اور چین کو اس کونسل کی کسی بھی قرار داد کو ویٹو کرنے کا حق حاصل ہے- اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ڈھانچے خاص طور پر صرف پانچ ملکوں کو حق ویٹو دیئے جانے پر، دنیا کے اکثر ملکوں کی جانب سے اعتراض کیا جاتا رہا ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Dec 12