Friday - 2018 August 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 83416
Published : 15/9/2015 8:32

ایران کی اعلی قومی سلامتی کے سیکریٹری سے برازیل کے وزیر خارجہ کی ملاقات

اسلامی جمہوریہ ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری نے ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے ایٹمی مذاکرات کے تجربے کو ملکوں کے لئے تشدد کے بجائے سیاسی رویہ اختیار کئے جانے کا نمونہ قرار دیا- ارنا کی رپورٹ کے مطابق ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری علی شمخانی نے اتوار کو تہران میں برازیل کے وزیر خارجہ ماؤرو وییرا سے ملاقات میں کہا کہ ایران کے ایٹمی مذاکرت، تمام ممالک کے لئے ایک نمونہ ہیں تاکہ تنازعہ اور تشدد کے بجائے سیاسی روش اختیار کر کے خطرات کو کم اور خود مختار ممالک کے قانونی حقوق کے احترام کی راہوں کا انتخاب کیا جائے-
ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری نے کہا کہ ایران عالمی مسائل کے حل بالخصوص شام، عراق اور یمن میں امن و استحکام کی بحالی اور ان ملکوں کے عوام کو ان کی تقدیر کا فیصلہ کرنے کا حق دلانے کے لئے اپنے دوستوں کے ساتھ قریبی تعاون کرتا ہے لیکن افسوس کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل بڑی طاقتوں کے زیر اثر عالمی امن و صلح کے دفاع کے سلسلے میں یکساں طرزعمل اختیار نہیں کرتی اور نہ ہی متحدہ روش پر عمل نہیں کرتی-
اس ملاقات میں برازیل کے وزیر خارجہ ماؤرو وییرا نے ایٹمی مذاکرات میں ایران کے تعمیری اور قابل تعریف رویے کو سراہا اور دو طرفہ اقتصادی و سیاسی تعلقات اور پرامن ایٹمی توانائی کے فروغ پر تاکید کی- ماؤرو وییرا نے برازیل میں شامی شہریوں کی موجودگی کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ فوجی کارروائی ، صرف شام کے حالات مزید پیچیدہ ہونے پر منتج ہو گی اور اس ملک کے عوام کے عزم اور مطالبات کی بنیاد پر سیاسی طریقہ کار اختیار کرنے سے ہی شام کا بحران ختم ہو سکتا ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Friday - 2018 August 17