Wed - 2018 Oct. 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 83432
Published : 15/9/2015 9:44

اراک ری ایکٹر کی نئی ڈیزائننگ کی دستاویزات تیار کرنے کے بارے میں ایران، امریکا اور چین کے درمیان مذاکرات

اسلامی جمہوریہ ایران، امریکا اور چین نے اراک تحقیقاتی ری ایکٹر کی نئی ڈیزائننگ سے متعلق دستاویزات تیار کرنے کے بارے میں مذاکرات کئے ہیں- ارنا کی رپورٹ کے مطابق ایران، امریکا اور چین کے ایٹمی توانائی شعبے کے حکام نے ویانا میں ایٹمی توانائی کی بین الاقوامی ایجنسی، آئی اے ای اے، کی انسٹھویں جنرل کانفرنس کے موقع پر سہ فریقی نشست منعقد کی جس میں مشترکہ جامع ایکشن پلان سے متعلق موضوعات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا- اس نشست میں ایران کے وسطی شہر اراک میں واقع اراک تحقیقاتی ری ایکٹر کی نئی ڈیزائننگ پر عمل درآمد کے طریقہ کار سے متعلق دستاویزات تیار کئے جانے کا موضوع بھی شامل تھا- ایران کے ایٹمی توانائی کے ادارے کے سربراہ علی اکبر صالحی نے چھبیس اگست کو اپنے چین کے دورے میں اراک ری ایکٹر کی نئی ڈیزائننگ کے بارے میں چینی حکام سے بات چیت کی تھی اور بھاری پانی کے ری ایکٹر سمیت چین کی ایٹمی صنعتوں کا بھی دورہ کیا تھا۔ اس وقت اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ چین کے وسیع اقتصادی و سیاسی تعلقات ہیں اور ایران کے ساتھ ہونے والے ایٹمی مذاکرات میں روس کے ساتھ ساتھ گروپ پانچ جمع ایک میں شامل دیگر ملکوں کی نسبت چین کا موقف بھی نسبتا مناسب تھا۔ ایٹمی توانائی کی بین الاقوامی ایجنسی، آئی اے ای اے، کی انسٹھویں جنرل کانفرنس آج سے ویانا میں آئی اے ای اے کے ہیڈ کوارٹر میں شروع ہوئی ہے جو پانچ روز تک جاری رہے گی-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Oct. 17