Saturday - 2018 مئی 26
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 83587
Published : 17/9/2015 8:3

پابندیاں، پیداوار میں اضافے کا محرک بنی ہیں: ڈاکٹر روحانی

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر نے کہا ہے کہ ملت ایران کے خلاف مغرب کا دباؤ اور یکطرفہ پابندیاں، ایران کے پیداواری شعبے میں تیزی آنے کا محرک بنی ہیں-
ارنا کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے بدھ کے روز تہران میں شعبہ صحت میں نالج بیسڈ کمپنیوں کے ڈائرکٹروں کی پہلی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ مغرب کی جانب سے دباؤ اور یکطرفہ پابندیوں نے ایرانی عوام کے حوصلے دوگنا کر دیئے اور یہی مسئلہ اس بات کا باعث بنا کہ وہ تمام شعبوں میں اپنی شان و عظمت اور صلاحیتوں کا اظہار کریں-

 صدر مملکت نے کہا کہ مشترکہ جامع ایکشن پلان کے تحت، پرامن ایٹمی شعبے میں تحقیق، اسے فروغ دینے اور نئی ٹیکنالوجیوں کے حصول کی راہ میں تیزی سے آگے بڑھنے کے حالات فراہم ہوئے ہیں-
 ڈاکٹر حسن روحانی نے کہا کہ نالج بیسڈ کمپنیاں، دانشوروں اور یونیورسٹی اسکالروں کی توجہ اپنی جانب مبذول کرنے اور تعلیم یافتہ نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کا بہترین ذریعہ ہیں- انہوں نے کہا ہمیں پابندیاں ختم ہونے کے بعد، وجود میں آنے والے نئے حالات میں ملک کو ارتقائی منازل سے ہمکنار کرنے کے لئے اپنی تمام تر توانائیاں بروئے کار لانا ہوں گی-
 اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر نے اس امر پرتاکید کرتے ہوئے کہ آج ہمیں پابندیاں اٹھائے جانے کے بعد کے حالات کے لئے منصوبہ بندی کرنا چاہیئے کہا کہ ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے ایٹمی مذاکرات میں ہم، سائنس و ٹیکنالوجی میں مزید پیشرفت اور پر امن ایٹمی ٹیکنالوجی کے حصول سے دست بردار نہ ہونے کی بات پر قائم رہے اور بالاخر ہم نے اپنی بات منوا لی۔
 صدر حسن روحانی نے دشمنوں کے مقابلے میں ہوشیار رہنے پر تاکید کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران ان تمام کمپنیوں کا خیر مقدم کرتا ہے جو سرمائے اور ٹیکنالوجی کے ہمراہ ایران آنا چاہتی ہیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 مئی 26