Monday - 2018 August 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 83609
Published : 17/9/2015 11:57

یمن میں پیشقدمی کے بارے میں سعودی عرب کا دعوی جھوٹا ہے: محمد علی حوثی

یمن کی عوامی انقلابی کمیٹیوں کے سربراہ نے یمن مخالف اتحاد کے فوجیوں کے دارالحکومت صنعا کے قریب پہنچنے کے دعووں کو مضحکہ خیز قرار دیا ہے- یمن کی عوامی انقلابی کمیٹیوں کے سربراہ محمد علی الحوثی نے بدھ کو مصری نیوز ویب سائٹ کو انٹرویو دیتے ہوئے یمن مخالف اتحاد کے فوجیوں کے صنعا کے قریب پہنچ جانے کی خبر کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ تعز پر یمنی فوج کا مکمل کنٹرول ہے اور آئندہ دو دنوں میں صوبہ مارب کو آزاد کرا لئے جانے کے پیش نظر یہ دعوے بےبنیاد ہیں- محمد علی الحوثی نے یمن میں مصری فوجیوں کی موجودگی کو ذرائع ابلاغ کا پرو پیگنڈا قرار دیا اور ملت مصر سمیت دنیا کے آزاد ملکوں سے ملت یمن کی حمایت کا مطالبہ کیا- محمد علی الحوثی نے اپنے اہداف کے حصول میں سعودی ایجنٹوں اور پٹھوؤں کی ناکامی کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ بعض ملکوں نے جنگ بندی کے لئے کچھ منصوبے تیار کر رکھے ہیں لیکن یمن مخالف اتحاد کے رکن ممالک جنگ بندی کے کسی بھی منصوبے پر عمل درآمد کو روک دیتے ہیں- تحریک انصار اللہ کی انقلابی کمیٹیوں کے سربراہ نے سعودی حکومت کے جرائم پر اقوام متحدہ کی خاموشی پر افسوس ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ یمن میں قتل عام، بنیادی تنصیبات کی تباہی و بربادی اور انسانی المیے کہ جس کے نتیجے میں ستر لاکھ یمنی بے گھر اور دربدر ہو گئے ہیں، کی ذمہ داری اس ادارے پر عائد ہوتی ہے- اس سے قبل سعودی عرب کی سرکردگی میں یمن مخالف عرب اتحاد نے دعوی کیا کہ اس اتحاد کے فوجی دارالحکومت صنعا کے قریب پہنچ گئے ہیں اور اب صنعا سے صرف ستر کلومیٹر کے فاصلے پر ہیں- اسی طرح بعض عرب ذرائع نے یہ دعوی کیا ہے کہ یمن کے مفرور سابق صدر عبد ربہ منصور ہادی نے جو سعودی عرب بھاگ گئے تھے، ایک بار پھر اپنا دالحکومت ریاض سے عدن منتقل کر دیا ہے- یمنی فوج اور عوامی کمیٹیوں نے ابھی تک اس دعوے کے بارے میں کوئی ردعمل ظاہر نہیں کیا ہے-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 August 20