Sunday - 2018 Sep 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 84156
Published : 27/9/2015 19:44

ایران میں انسانی حقوق کی صورتحال کے بارے میں رپورٹ مسترد

ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان نے انسانی حقوق کی صورتحال کے بارے میں اقوام متحدہ کی رپورٹ کو قانونی جواز سے عاری قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا ہے۔ وزارت خارجہ کی ترجمان مرضیہ افخم نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے ستّرویں اجلاس میں انسانی حقوق کے بارے میں سیکریٹری جنرل کی پیش کردہ رپورٹ کے بارے میں کہا کہ اس طرح کی رپورٹیں مستند اور معتبر ذرائع سے تیار کی جانا چاہیں جبکہ اس رپورٹ میں ایسا نہیں کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ یہ رپورٹ سیاسی محرکات کی حامل ہے اور اس میں غیر جانبدار ذرائع سے استفادہ نہیں کیا گیا۔
ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا کہ اس رپورٹ میں ایران میں انسانی حقوق کی صورتحال کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ اس رپورٹ میں بعض ملکوں کی جانب سے عائد کی جانے والی یک طرفہ پابندیوں کے انسانی حقوق پر پڑنے والے اثرات کو بھی ملحوظ خاطر نہیں رکھا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ اس رپورٹ کی تیاری میں ایران میں خواتین سے متعلق شعبوں کی ترقی، سول سوسائٹی کی سرگرمیوں اور عوامی اداروں کے قیام نیز ایران کی تہذیبی اور ثقافتی اقدار کو بھی یکسر انداز کردیا گیا ہے جس کے سبب یہ رپورٹ غیر مستند اور ناقابل اعبتار ہوگئی ہے۔ 
ایران کی وزارت خارجہ کی ترجمان نے کہا کہ تہران انسانی حقوق کے تحفظ کے حوالے سے عالمی قوانین کی مکمل پاسداری کر رہا ہے اور اس سلسلے میں اقوام متحدہ کے ساتھ تعاون کو خصوصی اہمیت دیتا ہے۔ 
مرضیہ افخم نے یہ بات زور دے کر کہی کہ انسانی حقوق سے متعلق معاہدوں کی نگرانی کرنے والے اداروں کے ساتھ ایران مسلسل تعاون کر رہا ہے اور انسانی حقوق کے رپورٹروں کو وقتا فوقتا ایران کی آنے دعوت بھی دیتا رہتا ہے جو اس بات کا ثبوت ہے کہ ایران انسانی حقوق کے ارتقا کو اتنہائی اہمیت دیتا ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Sep 23