Sunday - 2018 Dec 16
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 84849
Published : 8/10/2015 7:59

امریکہ داعش کو شکست دینے میں دلچسپی نہیں رکھتا- ظریف

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے کہا ہےکہ امریکہ اپنے اتحادیوں کے مفادات کے منافی ہونے کے سبب داعش دہشت گرد گروہ کو شکست دینے میں دلچسپی نہیں رکھتا ہے- ارنا کی رپورٹ کے مطابق ایران کے وزیر خارجہ جواد ظریف نے پیر کے روز نیویارک سے روانگی سے قبل ڈینور یونیورسٹی میں ایک اجلاس میں، علاقے اور دنیا کے مختلف مسائل کے تعلق سے ایران کے مواقف اور نقطہ ہائے نگاہ بیان کئے- جواد ظریف نے ایران اور گروپ پانچ جمع ایک کے معاہدے کےبارے میں کہا کہ ایران کی ایٹمی مذاکراتی ٹیم نے، مذاکرات میں ایسی روش اپنائی کہ جس میں کسی بھی فریق کی شکست نہ ہو اور اس وقت ہم ایک ایسے مرحلے میں ہیں کہ اسی طرز فکرکی بنیاد پر، اس معاہدے پر عملدرآمد کر رہے ہیں تاکہ نتیجے میں تمام فریق کو کامیابی حاصل ہو - ایران کے وزیر خارجہ نے علاقے کے بحرانوں کے حل کے سلسلے میں بھی کہا کہ مشرق وسطی کے علاقے میں انتہا پسندی اور دہشت گردانہ کاروائیاں، صرف عراق اور شام تک ہی محدود نہیں رہیں گی بلکہ یہ پوری دنیا کے لئے ایک مشترکہ خطرہ شمار ہوتی ہیں- جواد ظریف نے اس بات کا ذکر کرتے ہوئے کہ علاقے کے بعض ممالک داعش کے طرز فکر کی حمایت کر رہے ہیں کہا کہ جب تک بعض ممالک اور ان ملکوں کے بعض گروہ یا افراد اس گمان میں دہشت گردوں کی حمایت کرتے رہیں گے کہ یہ حمایت ایران کو کمزور کرنے کا باعث بنے گی، اس وقت تک وہ دہشت گردی کا ٹھوس مقابلہ کرنے سے عاجز رہیں گے- ایران کے وزیر خارجہ نے شام میں داعش کے ٹھکانوں پر روسی حملوں کے بارے میں کہا کہ امریکہ نے ایک سال قبل شام کے عوام اور حکومت کی اجازت کے بغیر، اس ملک پر ہوائی حملے شروع کئے تھے لیکن روس اس وقت شام کی درخواست پر یہ حملے کر رہا ہے- انہوں نے شام میں دہشت گردوں کے ٹھکانوں پر روس کے حملوں کی وجوہات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ان حملوں کی ایک وجہ یہ ہے کہ داعش دہشت گرد گروہ کی شکست و نابودی، علاقے میں امریکی اتحادیوں کے مفادات کے منافی ہے کیوں کہ وہ داعش کی شکست کو شام کی مرکزی حکومت کے مضبوط ہونے اور اس کے نتیجے میں ایران کے اثر و رسوخ میں اضافے کا باعث قرار دے رہے ہیں-


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Dec 16