Wed - 2018 Nov 14
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 85995
Published : 26/10/2015 13:30

بحران شام کے سیاسی حل میں ایران اور روس کے کردار پر زور

شامی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے بحران شام کے سیاسی حل میں ایران اور روس کے کردار کو اہم اور موثر قرار دیا ہے۔

دمشق میں روس کے سینئر رکن پارلیمنٹ سرگئی گاؤ ری لوف کے قیادت میں شام کا دورہ کرنے والے روسی وفد سے بات چیت کرتے ہوئے شامی پارلیمنٹ کے اسپیکر محمد جہاد اللحام نے کہا کہ شام اور عراق میں دہشت گردی کی نابودی کی غرض سے دمشق اور ماسکو کے درمیان ہماہنگی کے مثبت نتائج برآمد ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کے خلاف روس اور شام کی فضائی کارروائی بین الاقوامی قوانین اور اقوام متحدہ کے منشور کے عین مطابق ہے۔

انہوں نے کہا کہ روس اور شام کے درمیان اتحاد دہشت گردی کے خلاف قائم ہونے والا واحد بین الاقوامی قانونی اتحاد ہے۔
شام کے اسپیکر نے شام کی قومی اپوزیشن کے ساتھ مذاکرات کے ذریعے بحران شام کے سیاسی حل کی غرض سے تہران اور ماسکو کی مشترکہ کوششوں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ اس حوالے سے کسی بھی قسم کی بیرونی مداخلت کو ہرگز قبول نہیں کیا جائے گا۔

روسی وفد کے سربراہ سرگئی گاؤری لوف نے کہا کہ ان کا ملک شام میں قیام امن اور دہشت گردی کے خلاف جنگ میں دونوں ملکوں کی پارلیمانوں کے درمیان مکمل ہماہنگی پیدا کرنے کے لئے تیار ہے۔

قابل ذکر ہے روسی پارلیمنٹ اور سینٹ کے ارکان پر مشتمل ایک اعلی سطحی پارلیمانی وفد جمعے کے روز شام پہنچا ہے۔

حالیہ چند ماہ کے دوران روس کے پارلیمانی وفد کا یہ تیسرا دورہ دمشق ہے۔

اس سے پہلے شام کے صدر بشار اسد نے ماسکو کا دورہ کرکے صدر ولادی میر پوتن اور دیگر روسی حکام سے ملاقات اور گفتگو کی تھی۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Wed - 2018 Nov 14