Monday - 2018 Sep 24
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 86003
Published : 26/10/2015 13:58

روس اور فرانس کا ایران سے تیل کی خریداری کا سمجھوتہ

روس اور فرانس نے ایران سے تیل کی خریداری کا ابتدائی سمجھوتہ کرلیا ہے۔

ایران کی نیشنل پیٹرولیئم کمپنی کے بین الاقومی شعبے کے ڈائریکٹر محسن قمصری نے بتایا ہے کہ روس اور فرانس کے ساتھ تیل کی فروخت کا ابتدائی سمجھوتہ ہوگیا ہے۔

انھوں نے روس کی لوک آئل اور فرانس کی ٹوٹل کمپنی کے ساتھ مذاکرات کے نئے دور کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ دونوں کمپنیوں کے ساتھ خام تیل کی فروخت کا ابتدائی سمجھوتہ ہوگیا ہے۔

ایران کی نیشنل پیٹرولیئم کمپنی کے بین الاقوامی شعبے کے ڈائریکٹر نے بتایا کہ پابندیوں کے خاتمے کے بعد ایران سے تیل کی خریداری کے لئے اب تک دنیا کی کئی بڑی کمپنیاں مذاکرات انجام دے چکی ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ فرانس کی ٹوٹل کمپنی کے مشرق وسطی اور شمالی افریقا کے شعبے کے ڈائریکٹر اسٹیفن مائیکل نے گزشتہ ہفتے تہران میں تیل اور توانائی کے موضوع پر ہونے والی کانفرنس میں اعلان کیا تھا کہ ٹوٹل کمپنی ایران سے تیل کی خریداری کے ساتھ ہی، ایران میں پیٹرولیئم کے شعبے میں سرمایہ کاری اور اس شعبے سے متعلق جدید ترین ٹیکنالوجی بھی ایران کو فراہم کرنے کے لئے تیار ہے۔

ایران کے پیٹرولیئم کے وزیر بیژن نامدار زنگنہ نے بھی اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ ایران میں پیٹرولیئم کے شعبے میں فرانس کی ٹوٹل کمپنی نے وسیع پیمانے پر تعاون کی آمادگی ظاہر کی ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Sep 24