Saturday - 2018 Nov 17
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 86011
Published : 26/10/2015 16:45

یمن کے مفرور سابق صدر کے نائب اور وزیر خارجہ کے درمیان اختلافات میں شدت

یمن کی مستعفی حکومت کے ایک قریبی ذریعے نے مفرور سابق صدر کے نائب اور مستعفی حکومت کے وزیر خارجہ کے درمیان اختلافات میں شدت آنے کی خبر دی ہے۔ یمن کی مستعفی حکومت کے ایک قریبی ذریعے نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ یمن کے مفرور سابق صدر منصور ہادی کے نائب خالد بحاح اور مستعفی حکومت کے وزیر خارجہ ریاض یاسین کے درمیان اختلافات شدت اختیار کر گئے ہیں۔
اس یمنی ذریعے نے اس بات پر زور دیا کہ ریاض یاسین منصور ہادی گروپ کا حصہ ہیں اور یہی بات دونوں فریقوں کے درمیان اختلافات میں اضافے کا اہم ترین سبب ہے۔ اس ذریعے کا کہنا ہے کہ خالد بحاح نے محمد الشادلی کو عدن کا گورنر بنائے جانے سمیت منصور ہادی کے بعض فیصلوں کی مخالفت کی ہے۔ 
اس یمنی ذریعے نے ان اختلافات کے دیگر اسباب کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ یمن کی مستعفی حکومت میں بعض ایسے وزرا شامل ہیں کہ جو حوثیوں کی تائید کرتے ہیں اور خالد بحاح نے ان کی برطرفی کا مطالبہ نہیں کیا لیکن منصور ہادی نے حال ہی میں ان وزرا کو برطرف کر دیا ہے۔ 
اس ذریعے نے مزید کہا کہ حکومت میں حوثیوں کے حامی کئی یمنی سفیر بھی ہیں لیکن خالد بحاح نے ان کو برطرف کرنے کی ریاض یاسین کی تجویز کی مخالفت کی ہے۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Saturday - 2018 Nov 17