Thursday - 2018 Sep 20
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 86086
Published : 27/10/2015 20:11

سلامتی کونسل جنرل اسمبلی سے مربوط مسائل میں مداخلت نہ کرے، ایران کا مطالبہ

اقوام متحدہ میں ایران کے نائب مستقل مندوب نے جنرل اسمبلی کے فرائض و اختیارات سے متعلق مسائل میں سلامتی کونسل کی مداخلت پر سخت خبردار کیا ہے۔

اقوام متحدہ میں ایران کے نائب مستقل مندوب غلام حسین دہقانی نے پیر کے روز اقوام متحدہ کی چھٹی کمیٹی کے اجلاس میں اس عالمی ادارے کے ڈھانچے میں اصلاحات کی ضرورت پر تاکید کرتے ہوئے کہا کہ سلامتی کونسل کو جنرل اسمبلی کی کارروائیوں میں مداخلت کرنے سے گریز کرنا چاہئے۔

انھوں نے اقوام متحدہ کے اہم اور بنیادی رکن کی حیثیت سے جنرل اسمبلی کے کردار پر تاکید کرتے ہوئے اس سے مربوط مختلف مسائل میں سلامتی کونسل کی مداخلت پر کڑی تنقید کی۔

غلام حسین دہقانی نے مختلف ملکوں کے خلاف سلامتی کونسل کی پابندیوں کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ کسی بھی ملک کے خلاف پابندیوں کا اقدام، اسی صورت میں عمل میں آسکتا ہے کہ وہ ملک، کوئی جارحانہ کارروائی کرے یا پھر وہ ملک، عالمی امن و سلامتی کے لئے خطرہ بن جائے۔

انھوں نے دفاعی اقدام کے طور پر پابندیوں کے عمل کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے کہا کہ پابندیوں کا اقدام، ایک ایسا اندھا ہتھکنڈہ ہے کہ جس سے اس ملک کے عوام کو بہت زیادہ سخت مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے کہ جس کے خلاف پابندی عائد کی جاتی ہے۔

اقوام متحدہ میں ایران کے نائب مستقل مندوب نے اقوام متحدہ کے اہم منشور کے بارے میں ناوابستہ تحریک کی تجاویز پر بعض ملکوں کے غیر منطقی رویے پر بھی تنقید کرتے ہوئے اس عالمی ادارے کے جمہوری عمل کو مضبوط بنانے کے لئے مجوزہ تجاویز کے مقاصد پر روشنی ڈالی اور اقوام متحدہ کے منشور کی خصوصی کمیٹی کی جانب سے ان تجاویز کا گہرائی کے ساتھ جائزہ لئے جانے کی ضرورت پر تاکید کی۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Sep 20