Tuesday - 2018 Sep 25
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 86184
Published : 29/10/2015 7:58

عراق میں داعش کے خلاف ملک گیر آپریشن میں تیزی

عراق میں داعش کے خلاف ملک گیر آپریشن میں تیزی آگئی ہے۔ مختلف علاقوں میں داعش کے ٹھکانوں پر فضائی حملوں میں درجنوں دہشت گرد ہلاک ہوگئے ہیں۔

یہ ایسی حالت میں ہے کہ سنجار میں کرد ملیشیا نے بھی داعش کے خلاف اہم کامیابی حاصل کی ہے۔  
سومریہ نیوز ایجنسی کے مطابق صوبہ نینوا میں داعش کے ایک کارواں پر عراقی فضائیہ کے حملے میں درجنوں دہشت گرد ہلاک ہوگئے . 

داعش کے ایک کارواں پر موصل کے جنگلوں کے نزدیک البعاج نامی علاقے میں بھی بمباری کی گئی ۔ اس حملے میں بھی درجنوں دہشت گرد ہلاک ہوئے ہیں۔ رپورٹوں میں بتایا گیا ہے کہ اس فضائی حملے میں داعش کی کم سے کم چھے گاڑیاں تباہ ہوگئیں۔ 

اسی طرح تلعفر میں داعش کے اسلحے کے ایک گودام پر فضائی حملے میں بھی بہت سے دہشت گرد ہلاک ہوگئے۔ اس حملے میں گودام میں موجود اسلحے کے ساتھ داعش کی متعدد گاڑیاں بھی تباہ ہوگئیں۔ 

دوسری طرف عراق کی زمینی فوج نے ابوماریا نامی علاقے میں داعش کے ایک خفیہ ٹھکانے پر حملہ کرکے اس کو ختم کردیا ہے۔ عراقی فوج کے اس آپریشن میں بڑی تعداد میں دہشت گردوں کی ہلاکت کی خبر ہے۔

ادھر عراق پریس نے رپورٹ دی ہے کہ عراق کی کرد ملیشیا نے سنجار کا وسیع علاقہ داعش سے واپس لے لیا ہے۔اس رپورٹ کے مطابق کرد ملیشیا کے جوان کئی طرف سے سنجار میں داخل ہوئے اور داعش کو پسپا کرتے ہوئے وسیع علاقے کو ان کے قبضے سے آزاد کرالیا۔ 

سنجار شام کی سرحد کےنزدیک واقع ہے ۔ داعش کے لئے یہ علاقہ اس لحاظ سے کافی اہمیت رکھتا ہے کہ یہ علاقہ عراق کے صوبہ نینوا کو شام کی سرحدوں سے ملاتا ہے۔ اس کے علاوہ اسی راستے سے داعش کے افراد موصل میں ایندھن اور کھانے پینے کی اشیا پہنچاتے ہیں ۔ 

دس مارچ دو ہزار چودہ کو اسی راستے سے آکر داعش نے موصل پر قبضہ کیا تھا جو اب تک باقی ہے۔ موصل میں داعش کے داخل ہونے کے بعد سیکڑوں گھرانے اپنا گھر بار چھوڑکر مہاجرت پر مجبور ہوگئے جبکہ اس علاقے کے تقریبا چار لاکھ افراد داعش کے محاصرے میں آگئے۔ داعش گروہ عراقی عوام سے انسانی ڈھال کے طور پر بھی کام لیتا ہے۔ 

عراق سے موصولہ ایک اور رپورٹ میں عراقی سیکورٹی ذرا‏ئع کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ شام میں روس کے فضا‏ئی حملے شروع ہونے کے بعد داعش کے دہشت گردوں اور ان کے گھروالوں کی بڑی تعداد بھاگ کے عراق میں داخل ہوگئی ہے۔

مصر کے روزنامہ الیوم السابع آن لائن کے مطابق عراقی صوبے الانبار کی پولیس کے ایک اعلی عہدیدار نے بتایا ہے کہ داعش کے بہت سے اراکین جن میں غیر ملکی دہشت گرد بھی شامل ہیں، اپنے گھروالوں کے ہمراہ شام سے بھاگ کے عراق کے مغربی علاقوں میں داخل ہوئے ہیں۔ انھوں نے بتایا کہ الرطبہ ان علاقوں میں شامل ہے جہاں داعش کے افراد اپنے گھر والوں کے ہمراہ شام سے بھاگ کے آئے ہیں۔ عراق کے علاقے الرطبہ کے اعلی سرکاری عہدیدار کا کہنا ہے کہ شام میں روس کے فضائی حملے شروع ہونے کے بعد وہاں سے دہشت گرد بھاگ بھاگ کے عراق آرہے ہیں۔ 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Sep 25