Sunday - 2018 مئی 27
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 86620
Published : 4/11/2015 17:49

میزائلوں سے متعلق کسی طرح کی پابندی قبول نہیں کی جائے گی: محمد علی جعفری

سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے کمانڈر انچیف میجر جنرل محمد علی جعفری نے کہا ہے کہ مشترکہ جامع ایکشن پلان پر عملدرآمد کے بعد میزائل ٹکنالوجی کے سلسلے میں کسی طرح کی پابندی قبول نہیں کی جائے گی۔

اسنا خبر رساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے کمانڈر انچیف میجر جنرل محمد علی جعفری نے پیر کے دن تہران یونیورسٹی میں ایک کانفرنس میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ ایٹمی معاہدے پر عملدرآمد کے بعد ایران کی فوجی اور میزائل ٹیکنالوجی میں پیشرفت سے متعلق کسی طرح کی تشویش نہیں پائی جاتی ہے۔

میجر جنرل محمد علی جعفری نے بتایا کہ ایران کی ایٹمی مذاکراتی ٹیم کے مطابق ایٹمی مذاکرات کے دوران فریق مقابل سے کہہ دیا گيا تھا کہ ایران میزائیل ٹیکنالوجی کے سلسلے میں کسی طرح کی پابندی قبول نہیں کرے گا۔

سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے کمانڈر انچیف میجر جنرل محمد علی جعفری نے کہا کہ میزائلوں کے سلسلے میں صرف ایک پابندی اور محدودیت ہے جس کا تعلق ایٹمی وار ہیڈ لے جانے والے میزائلوں سے ہے اور اسلامی جمہوریہ ایران کی ڈاکٹرائن میں اس  طرح کے میزائلوں کی کوئی گنجائش ہی نہیں ہے۔

میجر جنرل محمد علی  جعفری نے اس  بات کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہ امریکہ شام کے صدر بشار اسد کو اقتدار سے الگ کرنے کے درپے ہے ، کہا کہ شام کی استقامت کا دارومدار بشار اسد پر ہے اور شام کے عوام کی اکثریت بھی بشار اسد کی حامی ہے۔ سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے کمانڈر انچیف میجر جنرل محمد علی جعفری نے مزید کہا کہ اگر شام میں آزادانہ انتخابات ہوں اور اس ملک کے عوام بشار اسد کے علاوہ کسی اور کو منتخب کریں تو اسلامی جمہوریہ ایران، عوام کے فیصلے کی حمایت کرے گا۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 مئی 27