Tuesday - 2018 Oct. 23
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 87152
Published : 12/11/2015 13:17

شام کی حمایت پوری قوت کے ساتھ جاری رہے گی، ایران

ایران کے نائب وزیر خارجہ نے ایک بار پھر کہا کہ تہران پوری قوت کے ساتھ شام کی حمایت جاری رکھے گا۔

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایران کے نائب وزیر خارجہ حسین امیرعبداللھیان نے دہشت گردی کے خلاف کامیاب جنگ پر شام کے عوام، فوج ، حکومت اور صدر بشار اسد کو خراج تحسین پیش کیا۔

انہوں نے ایک بار پھر ایران کے اس موقف کا اعادہ کیا کہ بحران شام کو صرف اور صرف سیاسی طریقے اور سفارتی کوششوں کے ذریعے ہی حل کیا جانا چاہیے۔ ایران کے وزیر خارجہ نے یہ بات زور دیکر کہی کہ ویانا اجلاس میں شام کے سیاسی مستقبل کا فیصلہ کرنے کے بجائے اسے شامی عوام پر چھوڑ دیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ویانا اجلاس کے ذریعے ایسا ماحول فراہم کیا جائے جس کے تحت شامی عوام اپنے مستقبل کا فیصلہ خود کرسکیں۔

ایران کے نائب وزیرخارجہ نے فلسطین کی صورتحال کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس میں شک نہیں کہ تیسری تحریک انتفاضہ شروع ہوچکی ہے۔ انہوں نے صیہونی حکومت کو خبر دار کیا کہ اگر اس نے اپنا رویہ درست نہ کیا تو مستقبل میں اس سے بھی زیادہ سخت اور دشوار حالات کا سامنا کرنا پڑے گا۔

ایران کے نائب وزیر خارجہ نے کہا کہ یمن کے بارے میں بھی ایران کا موقف پوری طرح واضح ہے اور ہم سمجھتے ہیں کہ یمن کے تمام فریقوں کے درمیان مذاکرات کے ذریعے اس معاملے کا حل تلاش کیا جاسکتا ہے۔

ایران کے نائب وزیر خارجہ حسین امیر عبداللھیان بدھ کی صبح لبنانی حکام سے علاقائی اور عالمی معاملات پر تبادلہ خیال کی غرض سے بیروت پہنچے تھے۔ اس سے پہلے انہوں نے ماسکو میں اپنے روسی ہم منصب اور صدر ولادی میر پوتن کے خصوصی نمائندے میخائل بوگدونوف سے مشرق وسطی کی صورتحال کے بارے میں تبادلہ خیال کیا تھا۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Tuesday - 2018 Oct. 23