Thursday - 2018 Nov 15
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 87968
Published : 23/11/2015 15:58

ترکی، سعودی عرب اور قطر داعش کی پناہ گاہ، بشار اسد

شام کے صدر نے ترکی، سعودی عرب اور قطر کو داعش کی پناہ گاہ قرار دیا ہے۔

شام کے صدر بشار اسد نے اتوار کو چین کے فونکس ٹی وی سے گفتگو میں کہا کہ ترکی، سعودی عرب اور قطر نے اس حدتک داعش کی حمایت کی ہے کہ یہ ممالک داعش کے لئے محفوظ پناہ گاہ میں تبدیل ہو گئے ہیں۔ 

انھوں نے کہا کہ داعش کے عناصر خود ترک صدر، رجب طیب اردوغان اور وزیر اعظم احمد داؤد اوغلو کی براہ راست حمایت سے، ترکی کے راستے شام میں داخل ہوتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ اس خطے کے بعض ممالک یہ سمجھتے ہیں کہ شام کے بحران کا سیاسی حل ان کے مفاد میں نہیں ہے اس لئے انھوں نے شام کی حکومت کو گرانے کے لئے دہشت گردوں کی حمایت جاری رکھی ہے۔ 

انھوں نے کہا کہ ان ممالک کی کوشش ہے کہ شام میں ہر حال میں بحران جاری رہے۔ صدر بشار اسد نے دہشت گردوں کے خلاف جنگ اور سیاست، دونوں میدانوں میں اپنے ملک کی پوزیشن کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردوں کے خلاف جنگ میں روس کے شریک ہونے کے بعد شام کی پوزیشن مستحکم ہوئی ہے اور شامی فوج تقریبا ہر محاذ پر آگے بڑھ رہی ہے۔

انھوں نے شام میں داعش کے مراکز پر روس کے فضائی حملوں اور امریکا کی قیادت میں نام نہاد داعش مخالف اتحاد کی فضائی کارروائیوں کے درمیان پایا جانے والا فرق بتاتے ہوئے کہا کہ امریکی اتحاد کے حملے دہشت گردوں کے مفاد میں تھے لیکن روس کے حملے شروع ہونے کے بعد، پہلے مہینے میں ہی دہشت گردوں نے ترکی اور یورپ کی سمت بھاگنا شروع کر دیا۔ 


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Thursday - 2018 Nov 15