Sunday - 2018 Nov 18
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 88008
Published : 24/11/2015 9:52

دہشت گرد تنظیموں کے خلاف جنگ میں امریکا اور مغرب سے مدد کی آس لگانا غلط ہے

رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے نائيجیریا کے صدر محمد بوہاری سے ملاقات میں اسلام اور مسلمانوں کے تشخص کے دفاع میں اسلامی ملکوں کے باہمی تعاون کو بنیادی ضرورت قرار دیا اور زور دیکر کہا کہ دہشت گرد تنظیموں کے خلاف جنگ کے دعوے کرنے والے بین الاقوامی اتحاد ہرگز قابل اعتماد نہیں ہیں کیونکہ داعش جیسی دہشت گرد تنظیموں کی تشکیل یا حمایت کے پس پردہ خود یہی تخریبی عناصر بالخصوص امریکا سرگرم عمل ہے۔

رہبر انقلاب اسلامی نے پیر کو دوپہر سے قبل اپنی اس ملاقات میں اسلام کے کھلے ہوئے دشمنوں اور دین اسلام کے ان دشمنوں کو جو اسلام کے نام لیوا ہیں، ایک ہی قیچی کے دو پھل قرار دیا اور فرمایا کہ ان خطرناک دشمنوں کے مقابلے میں اسلامی ملکوں کو چاہئے کہ آپسی تعاون کو وسعت دیکر اپنے تشخص اور مفادات کی حفاظت کریں۔

قائد انقلاب اسلامی نے واشگاف لفظوں میں کہا کہ داعش اور بوکو حرام جیسی دہشت گرد تنظیموں کے خلاف جنگ میں امریکا اور مغرب سے مدد اور تعاون کی آس لگانا غلط ہے۔ آپ نے فرمایا کہ صحیح اطلاعات کے مطابق عراق میں امریکی اور علاقے کے بعض رجعت پسند ممالک داعش کی مدد کر رہے ہیں اور تخریبی کردار ادا کر رہے ہیں۔

رہبر انقلاب اسلامی کا کہنا تھا کہ اسلامی ملکوں کے باہمی روابط کا مطلب دیگر ملکوں سے قطع تعلق کر لینا نہیں ہے۔ آپ نے فرمایا کہ امریکا اور صیہونی حکومت کے علاوہ تمام ملکوں سے اسلامی جمہوریہ ایران کے وسیع تعلقات ہیں لیکن ہمارا یہ خیال ہے کہ اسلامی ملکوں کو ایک دوسرے کے اور زیادہ قریب آنے کی ضرورت ہے۔

آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے محمد بوہاری جیسے باعقیدہ مسلمان کو نائیجیریا جیسے اہم اور نمایاں ملک کا صدر منتخب کئے جانے پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایران اور نائيجیریا کے درمیان تعاون کو فروغ دینے کے وسیع امکانات موجود ہیں۔ آپ نے زور دیکر کہا کہ ان امکانات اور صلاحیتوں کی نشاندہی ہونی چاہئے۔

اس ملاقات میں نائیجیریا کے صدر محمد بوہاری کا کہنا تھا کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور نائیجیریا کے درمیان دیرینہ مستحکم تعلقات ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ایران ایک بڑا اور ترقی یافتہ ملک ہے جس کے پاس باہمی تعاون کے وسیع امکانات موجود ہیں۔

نائیجیریا کے صدر نے گیس کے ایکسپورٹر ملکوں کے سربراہی اجلاس میں شرکت کے لئے نائیجیریا کو ایران کی طرف سے دئے گئے دعوت نامے کی قدردانی کی اور کہا کہ رہبر انقلاب اسلامی سے ملاقات میں آج مجھے بہت کچھ سیکھنے کو ملا اور میں اس ملاقات اور اس میں حاصل ہونے والی رہنمائی کی قدر کرتا ہوں۔


آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Sunday - 2018 Nov 18