Monday - 2018 Oct. 22
Languages
دوستوں کو بھیجیں
News ID : 189618
Published : 17/9/2017 15:34

معصوم (ع) کے نزدیک شیعوں کی دو اہم خصوصیات

قیامت کے دن سب سے پہلا سوال نماز کے متعلق ہوگا،اگر نماز قبول ہو گئی تو باقی اعمال بھی قبول ہوجائیں گے اور اگر نماز ہی قبول نہ ہوئی تو باقی اعمال رد کر دیے جائیں گے۔


ولایت پورٹل:ملا محسن فیض کاشانی اپنی  کتاب«اسرار نماز»میں رقم طراز ہیں کہ:انسان کو نماز کے اسرار و رموز چھ شرائط سے سمجھ میں آتے ہیں۔
۱۔ حضورِ قلب: یعنی دل کو نماز کے دوران فقط خدا کی عظمت کی طرف متوجہ رکھا جائے۔
۲۔ قرائت ،ذکر و تسبیح کے معانی کو سمجھنا۔
۳۔ تعظیم یعنی اس حالت میں معبود کی جلالت و عظمت کو مدنظر رکھا جائے۔
۴۔ ہیبت یعنی خوف خدا ،نماز میں اللہ کا خوف انسان کے پورے وجود پر طاری رہے۔
۵۔ امید یعنی اپنے معبود سے امید رکھے کہ وہ اس کے گناہوں کو معاف فرما دے گا۔
۶۔ شرم، یعنی اپنی عبادت کو خدا کی عظمت و شان کے مقابلے میں انتہائی بے اہمیت سمجھے او شرمساری اور بندگی سے اپنا سر جھکائے۔
چنانچہ روایت میں وارد ہوا ہے:«اختبروا شیعتی بخصلتین، فان کانتا فیهم فهم شیعتی حقاً؛ محافظتهم لاوقات الصلوة، و مواساتهم فی المال مع اخوانهم المؤمنین، وان لم یکونا فیهم، فاعزب ثم اعزب ثم اعزب»۔
ترجمہ:میرے شیعوں کو دو خصلتوں سے پہچانو، اگر یہ ان میں پائی جائیں تو وہ حقیقی شیعہ  ہیں: ۱۔ اوقات نماز کا خیال رکھتے ہیں۔ ۲۔ اپنے مال سے اپنے مؤمن بھائیوں کی مدد کرتے ہیں۔




آپکی رائے



میرا تبصرہ ظاہر نہ کریں
تصویر امنیتی :
Monday - 2018 Oct. 22